جب اللہ کو ہرچیزکاعلم تھا تو پھر ایسے لوگوں کو پیدا کیوں کیا جو جہنم میں جائیں گے ؟

    شبہ نمبر 7: جب آپ کے بقول خدا کو ماضی، حال و مستقبل سے متعلق ہر چیز کا علم ہے، تو پھر خدا کو صرف ان لوگوں کو پیدا کرنا چاہیے تھا جو کسی نہ کسی درجہ میں کامیاب ہوجاتے اور آگ سے محفوظ رہتے۔ جب اللہ کو پتہ تھا کہ فلاں فلاں…

جب سب کچھ اللہ کی چاہت سے ہوتا ہے تو پھر بندے کو سزا کیوں ؟

شبہ نمبر 8: قرآن میں خدا کہتا ہے کہ “ماتشاءون الا ان یشاء اللہ” (یعنی اللہ کے چاہے بنا تم کچھ چاہ ہی نہیں سکتے)۔ معلوم ہوا انسان خدا کی چاہت کے سواء کچھ نہیں چاہ سکتا، تو پھر اعمال کی بندے کی طرف نسبت اور اسے سزا دینے کا کیا مطلب؟ نیز قرآن میں…

بیماراورمعذورلوگوں کو بوجہ کفرآخرت میں سزا ؟

شبہ نمبر4: جو انسان اس دنیا میں ان صلاحیتوں (مثلا بینائی) کے بنا پیدا ھوا جو آپ کے بقول خدا کی لامحدود نعمتوں سے محظوظ ھونے کیلئے ضروری ہیں اسے بوجہ کفر سزا دینے کا کیا مطلب؟ اسکی تو زندگی ہی ایک سزا ھے؟ تبصرہ: اس اعتراض کی دو جہات ہیں، اولا خدا کے گرینڈ…

اچھے کام کرنے والے غیر مسلم کو آخرت میں سزا کیوں ؟

شبہ نمبر 9: ایک ایسا بندہ (ملحد) جو خدا پر ایمان تو نہیں رکھتا مگر بے شمار اچھے کام کررھا ھے (مثلا غریبوں کی مدد کررھا ھے، ھسپتال بنا رھا ھے وغیرہ) نیز اچھے اخلاق کا حامل بھی ھے، تو خدا اسکے اچھے کاموں کو نظر انداز کرکے اس کے کفر یا شرک کی وجہ…

اسلام کے تعزیری قوانین اور جدید دنیا

عصر حاضر میں جرائم نے ایک عالم گیر وبا کی صورت اختیار کرلی ہے۔ دنیا کا کوئی خطّہ ان سے محفوظ نہیں ہے۔ تمام ممالک، خواہ وہ ترقی یافتہ ہوں، یا ترقی پذیر، یا پس ماندہ، ان کی لپیٹ میں ہیں۔ ان کا دائرہ سماج کے تمام طبقات تک وسیع ہے۔ خود ہمارا ملکِ عزیز…

جرائم کے خاتمے کا اسلامی طریقہ کار

اسلام نے جرائم کو جڑ سے اکھاڑ ڈالنے کے لیے جو منصوبہ پیش کیا اس کا خلاصہ یہ ہے : 1. سب سے پہلے وہ انسان کو خدائے تعالیٰ اور آخرت پر ایمان لانے اور کی دعوت دیتا ہے اور نفس کی پاکیزگی کا ایک نظام پیش کرتا ہے جس کے ہوتے ہوئے انسان کے…

شرعی سزائیں-اقسام اور شرائط

دنیا کے عام قوانین میں جرائم کی تمام سزاؤں کو تعزیرات کا نام دیا جاتاہے‘ خواہ وہ کسی بھی جرم سے متعلق ہوں‘اس لئے تعزیرات ہند‘ تعزیرات پاکستان کے نام سے جو کتابیں ملک میں پائی جاتی ہیں‘ اس میں ہرقسم کے جرائم اور ہرطرح کی سزاؤں کا ذکر ہے ۔ شریعت اسلامیہ میں جرائم…

زنا بالجبر-حدود کی شرائط کی عدم موجودگی اور سزا

سیکولرز طبقہ کی طرف سے زنا بالجبر وغیرہ کی شرعی سزا کے خلاف بہت سے اعتراضات پڑھنے سننے کو ملتے رہتے ہیں ، حال ہی میں اسلامی نظریاتی کونسل کے طرف سے جب یہ فیصلہ سنایا گیا کے ڈی این اے کا ثبوت زنا کی سزا کے لئے صرف ثانوی شہادت کے طور پر ہی…

شرعی سزائیں-آخر مسئلہ کیا ہے ؟

علماء کے درمیان اجماع پایا جاتا ہے کہ اگر حد کی شرائط پوری ہوجائیں یا مجرم خود اعتراف کر لے تو زبردستی زنا کرنے والے پر حد نافذ ہوگی۔ اور اگر حد کے شرائط پورے نہیں ہوتےتو اس کو دوسری سزا(تعزیر) دی جائے گی ( یعنی قاضی کو حق حاصل ہے کہ اس کو دوسری…

اسلام کے تعزیری قوانین اور بے رحمی کا اعتراض

اسلام کے تعزیری قوانین کی حکمت و معنویت سے جو حضرات واقف نہیں ہیں وہ ان پر مختلف پہلوؤں سے اعتراض کرتے ہیں۔ انھیں یہ سزائیں وحشیانہ اور سفّاکانہ دکھائی دیتی ہیں اور ان سے ان کی نظر میں بنیادی انسانی حقوق کی پامالی ہوتی ہے۔ ایک اعتراض بہت زور شور سے یہ کیا جاتا…

کیا مذہب خوف اور لالچ کی بنیاد پر بنا ہے؟

آج کل مختلف ذرائع سے اس بات کا پروپیگنڈا کیا جارہا ہے کہ مذہب کی بنیاد خوف ہے۔ یعنی مذہب یا مذاہب کےبانی انسان کو اس خوف میں مبتلاء کرتے ہیں کہ اگر مذہب کو نہیں مانو گے یا مذہب جو رویہ اختیار کرنے کو کہتا ہے اس کے مطابق نہیں چلو گے تو ایک…

لبرل انتہاء پسندی دہشت اور جنگیں

عہد حاضر کی دہشت گردی اور جنگیں اپنی سرشت میں لبرل اور جمہوری ہیں۔ مذہبی قوتیں مزاحمت تو کرتی ہیں مگر وہ سماج کی اجتماعی ہیئت کو تبدیل کرنے سے قاصر ہیں۔ حکمران مذہب کا استعمال اپنی مرضی سے کرتے ہیں۔ کیونکہ حقیقی قوت ریاست کی ساخت میں مضمر ہے نہ کہ کسی عقیدے میں!…

ظالم کون ؟ خدا یا سیکولر

آج کل ایک طبقہ ہمہ وقت اس کوشش میں رہتا ہے کہ وہ کسی نہ کسی طریقے سے خدا، بالخصوص اسلامی خدا کو دنیا میں پائی جانے والی ہر برائی اور قتل و غارت کا ذمہ دار ٹھہرا سکے۔ یہ بلاشبہ ایک انتہائی طفلانہ اور غیر ذمے دارانہ رویہ ہے۔ نوع انسانی کی تاریخ بتاتی…

کائنات کا خالق خدا کے علاوہ اور کوئی کیوں نہیں ہوسکتا؟

میں ولیم لین کریگ اور لیویس ولپرٹ کے درمیان خدا کے وجود پر مباحثہ ہوا تھا۔ جب ڈاکٹر کریگ خدا کے حق میں اپنا استدلال دے چکے تو ولپرٹ نے جھٹ کہا: “لیکن اس خدا کی جگہ کوئ کمپیوٹر بھی تو ہو سکتا ہے۔ میں تو اس کمپیوٹر کو مانتا ہوں۔” پھر مزید کہا کہ…

تربیت کا ماحول

میرے نانا (مرحوم) کے پاس تین گھوڑے اور دو گھوڑیاں ہوا کرتیں تھیں ، اصطبل میں الگ الگ باندھا کرتے _گھوڑوں کو سُدھانے کے لمحے وہ گھوڑوں کو ٹریننگ استھان میں گھوڑیوں سےالگ کرکے میدان میں دوڑایا کرتے ، یہ عرصہ چار ماہ پہ مشتمل ہوا کرتا تھا ، اور اس چار ماہ کے دوران…