مسئلہ ارتداد اعتراضات :اگردوسرے مذاہب والے بھی ایسا کردیں

    کچھ سطحی النظر متجددین مرتد کی سزا کے خلاف یہ دلیل بھی دیتے ہیں کہ اگر دوسرے ادیان بھی اسی طرح اپنے دائرے سے باہر جانے والوں کے لیے سزائے موت کا قانون مقرر کر دیں جس طرح اسلام نے کیا ہے. تو یہ چیز اسلام کی تبلیغ کے راستے میں بھی ویسی…

قرآن معجزاتی ناکہ سائنسی کتاب

قرآن کی” بعض “کی معجزاتی حیثیت کی بنیاد پر قرآن کی’ ’کُل“ پر ایمان کی دعوت کوئی منطق کے استقرائی طریقہ کار کے تحت نہیں ہوتی (کہ جس میں حتی الامکان تمام اجزاءکو الگ الگ انفرادی طور پر ثابت کرکے پھر انکے مجموعے یا کُل کا اثبات ممکن بنایا جاتا ہے )بلکہ صرف چند حقائق…

سائنس اور غیبی حقائق-چند ضروری باتیں

سائنس کی منہاج(Paradigm) مظاہرکائنات سے علاقہ رکھتی ہے۔ کائنات میں ہمہ وقت جاری وساری اَن گنت واقعات وامور میں ارادۂ الٰہی نے اگر کچھ موزو نیت اور اصول پنہاں کررکھے ہیں تب تو یہ دنیا ایک بامعنی اور بامقصد جہان ہے ، وگرنہ محض تو ہّم کاکارخانہ ۔ لیکن جبکہ ایسا نہیں ہے، یعنی حقیقتاً…

حقیقت مطلقہ (Absolute Reality) وحی اور عقل

اشیاء اور مطاہر کائنات کی حقیقت – دو انتہائیں عالم مادّہ اور اس میں جاری وساری مظاہروواقعات کی حقیقت وکنہ کی بابت فلاسفہ وحکماءکی دومخالف اپروچز کا تذکرہ یہاں ضروری ہے ، جودرحقیقت اس معاملے کی دو انتہائیں ہیں۔ تفریط پر واقع انتہا اس نقطہ نظر کی حامل ہے کہ اشیاءاور مظاہر کائنات جس طرح…

معقولیت(rationality)انسانی فطرت کا لازمی جزو..

بدیہیات اور مسلمات کا اختیار کیا جانا اور چیزوں کا مسلّمہ معیارات کے مطابق پرکھاجانا ایسی چیز نہیں جو انسان کے اندر ”ماحول کے بگاڑ“ یا ”چار سُو پھیلی گمراہیوں“ کی وجہ سے دَر آتی ہو۔ یہ ایک لازمی وصفِ انسانی ہے ، خواہ انسان تاریخ کے کسی دور او رتمدن وترقی کے کسی درجے…

سائنسی حقائق اور قرآنی اشارات

یہ بات ایک حقیقت ہے کہ گزرتے ہوئے زمانے اور ادوار کے ساتھ انسان نے مادی کائنات کے متعلق اپنے بنیادی علم کو بذریعہ تجربات اور تحقیق وتفتیش ناقابل یقین حد تک آگے بڑھادیا ہے ۔ اور کئی ایک ایسے حقائق کا ادراک کیا ہے جن تک پہنچنا گزشتہ ادوار میں ایک نا ممکن سی…

انسان اور کائنات کی فطرت

ایک پہچان وہ ہے کہ خالق و مالک کی بابت ازل سے ہی کائنات کے ذرے ذرے کی گھٹی میں پڑی ہوی ہے اور جس میں ہوش و خرد کا کوئی دخل ہے نہ ضرورت۔۔ اور ایک یہ معرفت و بندگی کا مقدمہ ہے جو کہ عقل و شعور کا اصل میدان ہے اور انسانیت…

الہامی مذہب ہو کر بھی غوروفکر کی دعوت۔۔!!

اسلام کے دین حق ہونے کی ایک دلیل یہ ہے کہ اس کے عقائد و ایمانیات اور اصول و فروع میں کوئی تضاد ،اختلاف، تعارض یا تناقض نہیں ہے ۔ ”اگر یہ (قرآن ) اللہ تعالیٰ کے سوا کسی اور کی طرف سے ہوتا تو یقینا یہ لوگ اس میں بہت کچھ اختلاف پاتے۔ “(النسآء…

ایمان اور عقل-افراط و تفریط کا جائزہ

دین کا فطرتاََ بمطابق عقل ہونا ( یا دونوں کا باہم مطابق ہونا) ایک الگ چیز ہے، اور کسی کی طرف سے دین کا مدارعقل پر ہونے کا دعوٰی ایک بالکل اور بات ۔ اول الذکر سے دوسرا قطعاََ لازم نہیں آتا۔ جو چیز پہلے کہی گئی اس کا مطلب یہ ہے کہ چونکہ دین…

حق اور خیر کے اجالوں کی طرف آنے میں عقل کا کردار

دین جو کچھ بھی ہے وہ بلاشبہ آ سمانوں سے ہی نازل ہوا ہونا ہے ،اور یوں خدائی ہدایت ہونے کے ناتے عقل کو ہمیشہ اس کے تابع ہی رہنا ہے ۔ لیکن دین کیا ہے اور اس پر انسان نے کیسے چلنا ہے، اس کا فیصلہ بھی انسان نے اپنی عقل کے ذریعے ہی…

ایمان کوئی جبری چیز نہیں ہے۔۔

کیا عقل کی تکمیل اور رہنمائی اس(عقل ) سے عدم ِمطابقت اور اختلاف و تضاد رکھتے ہوئے یا عقل کی فطرت کو نظر انداز کرتے ہوئے ہو سکتی ہے؟ پھر وہ رہنمائی ہی کیا ہوئی ؟ کیا کسی راستہ بھٹکے ہوئے یا منزل کی تلاش میں نکلے ہوئے کی رہنمائی جبراََ کی جاسکتی ہے؟ وہ…

ایمان بالغیب اورعقل -لوگوں کے تین گروہ

دین اور اسلام کی اصطلاح میں ایمان یقینا کسی ایسی چیز کا نام ہے جو اس مادی دنیا سے پرے اور ماوراءکسی ہستی اور جہان سے متعلق ہے۔ اس دنیا اور کائنات کے اندر اندر چیزوں کی پہچان اور ان کا ادراک ان معنوں میں ایمان ہرگز نہیں ۔ بلکہ یہ مشاہدہ کہلاتا ہے ۔…

روشن خیالی کے لبادے میں فرقہ پرست

پاکستان ایک ایسا ملک ہے کہ جہاں روشن خیالی اور فرقہ پرستی کے مابین تفریق محض ان دو الفاظ کی تفریق کے علاوہ اور کچھ نہیں ہے۔ روشن خیال طالبان پر تنقید کرتے ہیں، جبکہ حقیقت میں ان کی تنقید کا محرک ان کی روشن خیالی نہیں بلکہ ان کی فرقہ پرستی ہے۔ گہرا تضاد…

مذہب تلوار کی نوک پہ فتح کیے جاسکتے ہیں ؟!

“تاریخ نے از خود اس جھوٹ کو بے نقاب کیا جو اسلام نوک ِ سناں پہ ہمدم پھیلا ، کجا حقیقت یہ کہ اس مفروضے کو مورخوں نے اوج ِ مہارت سے گھڑا پھر دنیا میں پھیلا ڈالا!! مورخ ___{ڈی لیسی اولیری!}{ کتاب”اسلام ایٹ دا کراس روڈ{“______!!!!!} منٹو نے کہا تھا “بے وقوف ہیں وہ…

مجھے اس تضاد پہ حیرت ہوتی ہے ۔!!

“”مذہب کی موجودگی میں لوگ اتنے کمینے ہیں تو عدم موجودگی میں کیا ہونگے!!!؟”” سَر فرینکلن الحاد اپنی ذات میں اک اصول سموئے ہوئے ہے کہ کو ئی  بھی قانون آفاقی نہیں ہوتا مبادہ حرفِ آخر نہیں ہوتا _____ آپ چاہے تو اسے مانیں، چاہے اسے نا مانیں آپ پابند نہیں آپ آزاد ہیں ________…