دفاعی حربہ: ‘اگر ھم ماڈرنسٹ ھیں تو علماء بھی ماڈرنسٹ ھیں’

‘مسلم ماڈرنسٹ حضرات خود کو اسلامی تاریخ کا حصہ قرار دینے (درحقیقت اپنی مغربی بنیادیں چھپانے) کیلئے ایک کے بعد دوسرے حربے کی تلاش میں رھتے ہیں۔ کبھی کہیں گے کہ ھم اسلاف کے ساتھ اسی طرح اختلاف کررھے ھیں جس طرح اسلاف آپس میں ایک دوسرے کے ساتھ کرتے رھے ہیں، جب ان پر…

ماڈرنسٹوں کی ایک انوکھی دلیل ۔۔ کنٹکسٹ بدلنے سے اطلاق بدل جاتا ھے

جناب راشد شاز صاحب انڈیا سے تعلق رکھنے والے ایک متشدد قسم کے ماڈرنسٹ ہیں (جیسا کہ انکی کتاب کے نام ”مسلم ذھن کی تشکیل جدید” سے ظاھر ھے) اور غامدی صاحب سے بھی متاثر ھیں۔ ذیل کے پوسٹ میں یہ جناب اپنے تجددانہ افکار کے جواز کیلئے یہ سنہرا اصول بیان فرماتے ھیں کہ…

ماڈرنسٹ مفکرین سے کون متاثر ھوتا ھے؟

ایک روح پرور تبدیلی ایک دور تھا جب مغربی علمیت سے مرعوبیت کے زیر اثر ہمارے یہاں مسلم ماڈرنزم نے جنم لیا۔ اس فکر نے دعوی کیا کہ آج تک کوئ اسلام کو درست سمجھا ہی نہیں، اصل اسلام وہ ہے جو مغرب برت رہا ہے۔ انہوں نے ‘اسلام کی مغرب کاری’ کا بیڑا اٹھایا۔…

تجدد اور الحاد کا باہمی تعلق۔۔۔۔

عیسائیت کی شکست و ریخت اور جدید تنویری الحاد کے غلبے کی تاریخ بتاتی ھے کہ لوگ یک دم مذھب ترک کرکے الحاد قبول نہیں کرلیتے بلکہ یہ ایک طویل عمل کا نتیجہ ھوتا ھے جسکا آغاز تجدد پسندی سے ھوتا ھے۔ اسکا مختصر نقشہ کچھ یوں ھے: الف) پہلے (ایک مخصوص تناظر میں) مذھب…

اسلام کوزمانےسےہم آہنگ کرنےکی خواہش-چندغورطلب نکات

ہر دور کے کچھ مخصوص نعرے ہوتے ہیں، جن کا چلن آہستہ آہستہ بڑھتا چلا جاتا ہے، حتیٰ کہ وہ ہرشخص کی زبان پر رواں ہوجاتے ہیں اور ہرکس و ناکس بلاادنیٰ غوروفکر، انھی کے انداز میں سوچنے اور انھی کی زبان میں بولنے لگتا ہے۔ہمارے دور میں بھی کچھ خاص نعرے ہیں، جو رواجِ…

انیسوی/بیسویں صدی کا کامیاب ترین اجتہاد ۔۔

  جنگ آزادی میں ناکامی کے بعد جب سرمایہ دارانہ استعماری ریاست نے خلافت اسلامیہ کے اجتماعی نظم کو تحلیل کردیا، اس موقع پر علماء کرام کے سامنے تین آپشنز تھے (1) استعمار کے خلاف مسلح جدوجہد برپا کی جاۓ (مگر جنگ آزادی کی ناکامی سے بظاھر اسکا غیر موثر ھونا واضح ھوچکا تھا) (2)…

اسلام – تجدد اور تجدید کی کشمکش

انسانی فکر زمان و مکان [time and space]کی حدود میں مقید ہے۔ وہ ماضی، حال اور مستقبل کے تمام حقائق سے واقف نہیں۔ وہ ایک محدود بصیرت کے ساتھ آج ایک چیز کو صحیح سمجھ کر پیش کرتی ہے، مگر کل جب وہ حالات سامنے آتے ہیں، جن کا کوئی تصور پہلے موجود نہ تھا،…

فقہ اسلامی کے مصادر

اسلامی نقطۂ نظرسے قانون کا اصل سرچشمہ اللہ تعالیٰ کی ذاتِ پاک ہے، اس لیے تمام قوانین کا رشتہ بہرحال اللہ تعالیٰ ہی سے ہےالبتہ بعض احکام کی نسبت صراحتاً اللہ اور اُس کے رسول کی طرف ہے اور بعض احکام قرآن وحدیث سے ثابت ہونے والے اصول وقواعد کی روشنی میں اہلِ علم نے…

فقہ اسلامی کا دائرہ کار، ضرورت اور اہمیت

٭فقہ :٭ لغت میں لفظ فقہ کو کسی چیز کے جاننے اور سمجھنے کے معنی میں استعمال کیاجاتا تھا، بعد میں اس کا استعمال خاص علم دین کے فہم میں ہونے لگا(لسان العرب ۵/۲۴۰،) قرآن پاک میں یہی مراد ہے(توبہ: ۱۲۲) اور حدیث میں بھی یہی معنی:من یرد اللّٰہ بہ خیرا یفقہ فی الدین(بخاری ۱/۱۶،…

فقہ اسلامی کی تاریخ و تدوین-ایک جائزہ

ہرعلم وفن کی تدوین اور اس کے ارتقاء بتدریج پایہ کمال کو پہونچتا ہے ،فقہ اسلامی پر بھی تدوین کے کئی مراحل گذرچکے ہیں۔علماء تاریخ فقہ کو پانچ دور میں تقسیم کرتے ہیں، پہلا دور اس کی نشوونما اور ابتداء کا ہے جس کا سلسلہ ۱۰ھء تک جاری رہا، دوسرا دور اس کی وسعت کا…

دورِجدید کا فقہی ذخیرہ – دوسرا وآخری حصہ

آٹھویں قسم :ابواب فقہیہ پر تفصیلی کتب عصر حاضر اختصاص و تخصص کا دور ہے،پورے فن کی بجائے فن کے مندرجات میں سے ہر ایک پر علیحدہ مواد تیار کرنے کا رجحان ہے،بلکہ ایک باب کے مختلف پہلووں میں سے ہر پہلو پر الگ الگ کتب لکھنے کا رواج ہے۔یہ رجحان فقہ اسلامی کے عصری…

دورِجدید کا فقہی ذخیرہ – حصہ اول

فقہ اسلامی زمانہٴ تدوین سے لے کر عصرِ حاضر تک مختلف مراحل سے گزری،اس پر متنوع انقلابات آئے،فقہ اسلامی کے طرزِ تصنیف اور طریقہٴ تدریس میں نوع بنوع تبدیلیاں واقع ہوئیں،فقہائے کرام نے ہر دور کے مطابق فقہ اسلامی کے گرانقدر ذخیرے کی تہذیب وتنقیح کی، ہر دور کے علمی مزاج و مذاق کے مطابق…

فقہی اختلافات اور انکی حقیقت

اسلام کا نظامِ قانون بنیادی طور پر جن پاکیزہ عناصر سے مرکب ہے وہ کتاب اللہ اور سنتِ رسول ہے، جواسلامی شریعت کے مرکزی مصادر ومآخذ ہیں، فقہ وقانون کی دنیا میں اسلامی نظامِ قانون، عدل وانصاف، توازن واعتدال، غلووتشدد سے اجتناب اور جامعیت وافادیت جیسی امتیازی صفات کے لیے شہرت رکھتا ہے، اس کی…

کیاآئمہ مجتہدین کافروعی مسائل میں اختلاف تفرقہ بازی ہے؟

اختلاف کی تعریف : خلاف کی لغوی تعریف ہے ، الاختلاف والمخالفة ، یعنی ایک شخص حال یا قول میں دوسرے کے مخالف رائے ومَنہج اختیارکرے ۔اورخلاف کی اصطلاحی تعریف ہے ، کہ کسی کے ساتھ قول یا رائے یا حالت یا هيئت یا مُوقف میں مخالف کرنا ۔یعنی خلاف یہ ہے کہ طرفين میں…

ذہنی غلامی کا مرض اوراس سے نجات

۔ [سلیم احمد مرحوم مشہور مفکر و شاعر گزرے ہیں، موجودہ تحریری سلسلے کی مناسبت سے انکی ایک تقریر جو انہوں نے تنظیم اساتذہ پاکستان کے کُل پاکستان اجتماع میں کی ‘ کی تلخیص پیش کی جارہی ہے۔ایڈمن] ذہنی غلامی سے نجات از سلیم احمد انگریز جب برعظیم میں آئے تو اپنے ساتھ دھواں گاڑی…