دنیا میں ظلم/قحط/بھوک اور ملحدین کے مغالطے

گزشتہ تحاریر سے یہ واضح ہے کہ وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم ، بهوک، افلاس،قتل وغارت گری، دہشت گردی، عدم تحفظ کا احساس، اخلاقی دیوالیہ پن، کرپشن اور دیگر معاشرتی و اخلاقی برائیاں انسانی معاشرے کے لیے انسانی تحفہ ہی ہیں،ملحدوں کی ڈهٹائی ملاحظہ فرمائیں کہ کمال ہوشیاری سے ان تمام افعال کا ذمہ دار…

دنیا میں قحط، بھوک، ظلم کا ذمہ دار’جدید انسان”

سرمایہ داری اور جدید بنیادی حقوق کے فلسفے نے ایک حاسد حریص لالچی مریض پید ا کیا ہے جس کا خدا اور نبی صرف پیسہ [Capital] ہے ۔ یہ طالب لذات جانور ہے لہٰذا لذتوں میں اضافہ کے لئے اسے ہر وقت، مسلسل ہر لمحے سرمایہ کی ضرورت ہے .مغربی فلسفے اور سائنس و ٹیکنالوجی…