اسلام میں جزیہ کا نظام

جزیہ اسلام سے پہلے اور اسلام کے بعد مختلف ناموں سے اقوام عالم میں رائج رہا ہے۔ یہ مغلوب اقوام پر ان کی تذلیل اور اُنھیں نفسیاتی لحاظ سے پست کرنے کےلیے لاگو کیا جاتا رہا ہے۔ اس طرح مغلوب اقوام سے انتقام لینے کے لیےبغض وعناد پر مبنی یہ ایک کارروائی تھی۔ لیکن اسلام…

جزیہ اورجدیدذہن کے اشکالات

جزیہ اس ٹیکس کو کہتے ہیں جو اسلامی حکومت اپنی غیرمسلم رعایا سے اس خدمت کے معاوضہ میں وصول کرتی ہے کہ وہ ان کے سیاسی، معاشرتی اور مذہبی حقوق کی حفاظت کی ذمہ دار ہے،آج کل تمام حکومتوں کا نظام ٹیکسوں پر چلتا ہے۔ حکومتیں شہری حقوق اور رہائش، سیکورٹی، انکم کے بیسوں ٹیکس…

اسلامی ریاست میں غیرمسلموں کےحقوق

آج کی دنیا میں اسلامی حکومت کے خلاف یہ پروپیگینڈابھی بہت زور شور سے کیا جاتا ہے کہ اسلامی ریاست میں غیر مسلموں کے حقوق محفوظ نہیں ہوں گے حالانکہ یہ پروپیگینڈا قطعی بے بنیاد ہے۔یہ درست ہے کہ اسلام اللہ تعالیٰ پر بلا شرکت غیرے ایمان لانے کی ایک عالمگیر دعوت ہے لیکن یہ…

اسلامی ریاست کے غیر مسلم شہری اورسیکولرحضرات کی غلط فہمیاں

ہمارے محترم جناب عاصم بخشی صاحب نے معروف مفکر محمد اسد اور ان کے بیٹے طلال اسد کا ایک فکری مکالمہ نقل کیا ہے ، جس میں دیگر مباحث کے ساتھ اسلامی ریاست میں غیر مسلم شہریوں کا ایشو بھی ذکر کیا گیا ہے ،مکالمے کے اس حصے میں اسلامی ریاست کے غیر مسلم شہریوں…

کیااہل کتاب مردوں کیساتھ مسلم عورتوں کانکاح کیاجاسکتاہے؟

جاوید احمد غامدی صاحب اور ان کے شاگردوں نے اہل کتاب عورتوں کے ساتھ نکاح سے استدلال کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر مسلموں کے ساتھ دوستانہ روابط رکھے جاسکتے ہیں۔ ہمارے نزدیک اہل کتاب خواتین کے ساتھ نکاح کی اجازت کا اصل مقصد اہل کتاب کے ساتھ دوستانہ روابط قائم کرنا نہیں تھا، بلکہ…

ذمیوں کےمتعلق فقہی مسائل اور شہری مساوات-ایک مکالمہ

کچھ عرصہ پہلے عمار خان ناصر صاحب جو غامدی مکتبہ فکر سے نسبت رکھتے ہیں’ نے ایک محقق عالم مولانا سمیع اللہ سعدی صاحب کے سوال کے جواب میں کچھ جزیء فقہی مسائل سیاق و سباق سے ہٹ کے پوسٹ کئے اور ان سے یہ ثابت کرنے کی کوشش کی کہ مسلم معاشروں میں اہل…

دوسرےدرجےکا’شہری’ تیسرےدرجےکا’انسان’

یہ چند گزارشات فقہائے اسلام کے بعض مقررات پر اصحابِ مورد کے اعتراضات کے سلسلہ میں ہیں، جن میں یہ ’’دار الاسلام‘‘ یا ’’جماعۃ المسلمین‘‘ کے اہل ذمہ کو ’دوسرے درجے کا شہری‘ کہہ کہہ کر چوٹیں فرما رہے ہیں۔ اس کا تھوڑا اندازہ مجھے محترم علی عمران صاحب کی پوسٹیں دیکھ کر ہوا، جن…

مسلم حکمرانوں کا باقی اہل مذاہب کیساتھ عملی تعامل

سید صباح الدین عبدالرحمان ہندوستان میں دارالمصنفین سے وابستہ فاضل محقق تھے۔ان کی ایک کتاب “اسلام میں مذہبی رواداری” کا لنک شیئر کیا جاتا ہے۔ اس میں انھوں نے محض تھیوری کی سطح پر نہیں، بلکہ مسلمان حکم رانوں کے عہد بہ عہد عملی تعامل سے غیرمسلموں کے ساتھ حسن سلوک کو بڑی محنت اور…

بھارت میں سیکولرازم کی حمایت کیوں کی جاتی ہے؟

۔ ہمارے بعض دوست اکثر یہ شکوہ کرتے ہیں کہ پاکستان میں مذہبی لوگ سیکولرازم کی مخالفت کرتے ہیں، جبکہ بھارت میں انہی مذہبی لوگوں یا جماعتوں کے ہم خیال اعلانیہ سیکولرازم کی حمایت کرتے ہیں، تو کیا یہ ’’کھلا تضاد‘‘ نہیں۔ آج ایک دوست نے ایک قدم آگے بڑھاتے ہوئے یہ فرمایا کہ جغرافیائی…