اس دین پہ پھر کون فدا نہ ہو۔۔!!

دلیل کی قوت، حقانیت کا رعب ، سادگی، گہرائی، گیرائی، بے ساختگی، قوتِ منطق، وحدتِ مضمون (consistency) اور وسعتِ بیان ۔۔ پھر ایک صاف شفاف روحانیت، وحدانیتِ خداوندی، خالق کی تعظیم اور کبریائی، خالق کی تسبیح و پاکیزگی کے نہایت گہرے مگر سادہ ترین پیرائے اور پھر اِن پیرایوں کی حیرت انگیز کثرت اور تنوع…

وہ جس نے ریگزاروں میں پھول کھلائے

جس کسی نے عربوں کی زندگی چند سال پہلے دیکھ رکھی ہو، کیا وہ یقین کرسکتا ہے کہ عمرؓ بن الخطاب ایسا سردارِ بنی مخزوم، جو کبھی عکاظ کے میلوں میں چمپئن ہوا کرتا تھا اور جوکہ آج بھی عرب کا سردار ہے بلکہ ’سپریم پاور‘ کا فرماں روا ہے۔۔ حبش کے سیاہ فام بلالؓ…

مذہبی اور غیر مذہبی فکر کا خلاصہ

مذہب کی صداقت اور مخالفین مذہب کے نظریے کی غلطی اس سے بھی واضح ہے کہ مذہب کو مان کر زندگی اور کائنات کا جو نقشہ بنتا ہے اور ایک نہایت حسین و جمیل نقشہ ہے وہ انسان کے اعلٰی افکار سے اسی طرح مطابق ہے جیسے مادی کائنات ریا ضیاتی معیاروں کے عین مطابق…

مذہب متعلق جدید استدلال کی بڑی غلطی

یہ ہے مخالفین مذہب کا وہ جدید مقدمہ جسکا گزشتہ تحاریر میں ہم نے جائزہ لیا ۔ اسکی بنیاد پر دور جدید کے بہت سے لوگ عضویات کے ایک امریکی پروفیسر کے الفاظ میں کہتے ہیں : “سائنس نے ثابت کردیا ہے کہ مذہب تاریخ کا سب سے ذیادہ دردناک اور سب سے بدترین ڈھونگ…

مذہب کی تاریخ کا ارتقائی مطالعہ اور مارکسی نظریہ

مذہب کو اقرار خدا سے انکا ر خدا تک پہنچانے میں نام نہاد ارتقائی مطالعہ کا بھی دخل ہے یہ حضرات یہ کرتے ہیں کہ پہلے ان تمام چیزوں کو جمع کر لیتے ہیں جو کبھی مذہب کے نام سے منسوب رہی ہیں پھر اس کے بعد اپنی مرضی کے مطابق ان کے درمیان ایک…

مذہب مخالف تاریخی استدلالات کا جائزہ

جولین ہکسلے لکھتا ہے ” خدا کا تصور اپنی افادیت کے آخری مقام پر پہنچ چکا ہے ‘ اب مزید ترقی نہیں کرسکتا۔ مافوق الفطری طاقتیں دراصل مذہب کا بوجھ اٹھانے کے لئے انسانی ذہن نے اختراع کی تھیں’ پہلے جادو پیدا ہوا، پھر روحانی تصرفات نے اسکی جگہ لی ، پھر دیوتاؤں کا عقیدہ…

مذہب مخالف نفسیاتی استدلالات کا جائزہ

فرائڈ لکھتا ہے کہ بچپن میں انسان کے لاشعور میں کچھ ایسی چیزیں بیٹھ جاتی ہیں ‘ جو بعد میں غیر عقلی رویے کا باعث بنتی ہیں ، یہی صورت مذہبی عقائد کی ہے ، مثلا دوسری دنیا اور جنت دوزخ کا تصور دراصل ان آرزووں کی صدائے بازگشت ہے جو بچپن میں آدمی کے…

آپ مسلمان پہلے ہیں یا انسان۔۔؟

ھیومنسٹ سیکولر جب آپ سے کہتے ھیں کہ “اصل میں تو آپ انسان ہیں نہ کہ مسلمان، ھندو یا عیسائی کہ ان شناختوں کا اقرار تو آپ بعد میں خود سے کرتے ھیں؛ یعنی پھلے آپ انسان ھوتے ھیں اور پھر مسلمان وغیرہ”، تو بظاھر بھلی معلوم ہونے والی اس بات کے پیچھے یہ ھیومنسٹ…

اس دل کو کس سے راہ ہے ۔۔؟ !

دِل کو دِل سے راہ ہوتی ہے۔ رسول اللہ ﷺاس بات کو یوں بیان کرتے ہیں:الاَرواح جنود مجندۃ (صحیح مسلم: 4773) یہ بات بہت اُمید افزا ہے تو بے انتہا خوفناک بھی۔ اس دل کو کس سے راہ ہے؟ یہ قریب قریب اس بات کا جواب ہوگا کہ آخرت میں آدمی کا ٹھکانہ کہاں ہونے…

اس جہاں کو ہے زیب اختلاف سے

افراد انسانی میں جو باہم اختلافات ہیں اس میں یہی حکمت ہے۔کوئی طاقت ور ہے اور کوئی کمزور، کوئی حسین ہے اور کوئی بدصورت، کوئی کالا ہے اور کوئی گورا، کسی کا دماغ شعر سے مناسب ہے اور کس کا ریاضی سے ، کوئی دولت کمانے میں ہوشیار ہے اور کوئی عاجز ، کوئی سائنسدان…

یورپ کی چھلنیاں ذرا انہی پر لگا کے دیکھیے۔۔

جو حضرات اور طبقاتِ فکر جو چھلنیاں ذخیرہ حدیث اور مسلم تاریخ پر لگاتے ہیں یہ ذرا یورپ اور امریکہ کی تاریخ اور ذخیرہ و منبع ہائے قوانین پر لگا کر دیکھیے ۔ حضور ! ہمار ے پاس تو انشاءاللہ سب کچھ بچ رہے گا اور بچا ہوا ہے ۔ وہاں کچھ بھی نہیں نکلنا…

ایک منکر حدیث سے مکالمہ

قرآن اکیڈمی میں تنظیم کے کچھ دوستوں کی وساطت سے ایک منکر حدیث سے ملاقات ہوئی۔ بیٹھتے ہی سوالات کی بوچھاڑ کر دی کہ آپ کی تعلیم، ڈگری، مسلک، تعلیم کے مقاصد کیا ہیں وغیرہ۔ میں نے کہا: کام کی بات کریں کہ مسئلہ کیا ہے جس کے لیے آپ ملاقات کے خواہاں تھے؟ انہوں…

تاریخ اسلامی اور جدید فکری مغالطے

کسی بھی قوم کا رابطہ اگر اپنے ماضی سے ٹوٹ جاۓ تو اس قوم کی مثال ایسی ہی ہے جیسے کسی گناہ کے نتیجے میں پیدہ ہونے والے بچے کہ کوئی کچرے کے ڈھیر پر پھینک جاۓ اور وہ اپنے حقیقی نام و نسب کی تلاش میں ہمیشہ سر گرداں رہے …..جن لوگوں کا اپنے…

سوچ کر دیکھیے۔۔!

کیا یہی کم حیران کُن بات ہے کہ انسان، جو کہ مادے کی محض ایک ترتیب کا نتیجہ ہے، خود اپنے اخذ کردہ نتائج پر بے انتہا مطمئن ہوکر خود کو ہر ذمہ داری سے بَری سمجھنے لگے؟ پچھلے دنوں ایک صاحب سے سائنسی دریافت اور نتائج کی سند پر بات ہورہی تھی۔ بحث یہ…

فلسفیانہ طریق استدلال اور مذہب

ایک مشہور دعوی: “مذہب کے جو دعوے ہیں ان کی بنیاد کسی دلیل پر قائم نہیں ہے مذہب خالص اعتقادی چیز ہے۔ مذہب کی صداقتوں کو اس طور پر خارج میں (demonstrate) نہیں کیا جاسکتا ۔ اس لئے مذہب صرف ایک دعویٰ یا عقیدہ ہے۔ اس سے زیادہ اس کی کوئی حیثیت حاصل نہیں ہے۔”…