قرآن کی فصاحت اور بلاغت پر ایک اعتراض

ایک طرف تو قرآن کی فصاحت و بلاغت کو معجزہ قرار دیا جاتا ہے، کلام کے بلیغ ہونے کا مطلب ہی یہی ہے کہ اس کلام میں جو پیغام ہے وہ بالکل واضح طور پر مخاطب تک پہنچ جائے جسے مزید کسی “وضاحت” اور “وکالت” کی ضرورت پیش نہ آئے، لیکن یہ کیسا “کلام الہی”…