سیکولری لاجک-اگر وہ بھی ایسا کرلیں۔۔

ایک استدلال یہ بھی وضع کیا جاتا ھے کہ”اگر ہندوستان بھی اپنے ملک کو ہندو سٹیٹ ڈیکلیر کردے یا امریکہ عیسائی سٹیٹ ڈیکلیئر کردے تو آپ مسلمانوں کو کیسا لگے گا؟ تو اگر آپ ان سے انکے ملکوں میں برابری کے حقوق طلب کرتے ہیں تو اپنے ملک میں یہ حقوق کیوں نہیں دیتے؟’ “ریسیپروسیٹی”…

اسلام ایک ہے تو مولوی آپس میں لڑتے کیوں ہیں ؟!

اکثر یہ چبھتا ہوا سوال پوچھا جاتا ہے کہ اگر مسلمانوں کے موجودہ مسالک(دیوبندی، بریلوی، سلفی وغیرہ) و تنظیمی گروہ ایک ہی دھارے کے نمائندے ہیں تو پھر یہ اسلامی گروہ آپس میں لڑتے ہوئے کیوں پائے جاتے ہیں؟ اس کا جواب ‘ فی الحال ایک پختہ اسلامی خلافت (ایسی ریاست جو سنجیدگی کے ساتھ…

جدید انسان کا مذھب (1)

جدیدیت ذدہ انسان یہ دم بھرتا ھے کہ اس نے مذھب کو اسکی ‘ڈاگمیٹزم” کی وجہ سے ترک کرکے اجتماعی زندگی کی بنیاد ”سائنس” پر استوار کرلی ھے جو نہ تو مذھب کی طرح ڈاگمیٹک ھے اور نہ ہی جابرانہ۔ مگر اسکا یہ دعوی محض لفاظی ھے کیونکہ جدید اجتماعی زندگی جن سوشل سائنسز پر…

الحادی مغربی ڈسکورس کا خلاصہ اور چند غلط فہمیوں کا ازالہ

جدید مغربی (تنویری یعنی enlightenment) ڈسکورس خدا پرستی کو رد کرکے انسانیت (یا نفس) پرستی کی دعوت عام کرنے کا ڈسکورس ھے۔ اس علمی ڈسکورس نے انسان کو قائم بالذات اور آزاد ہستی مان کر پہلے خدا کو انسان سے اخذ کرنے کی کوشش کی (یعنی ترتیب حقائق بدل دی)، پھر خدا کو غیر متعلقہ…

جدیدیت کیا ھے؟

۔ جدیدیت (ماڈرنزم) سے مراد وہ ملحدانہ علمی تحریک ھے جسکا آغاز سترھویں اور اٹھارویں صدی عیسوی یورپ میں ھوا۔ اس علمی تحریک نے جس نظام زندگی کو فروغ دیا اسے سرمایہ داری کہتے ہیں جو الوہیت انسانی کے بنیادی عقیدے پر مبنی نظام ھے۔ سرمایہ داری اس نظام زندگی کو کہتے ہیں جہاں انفرادیت،…

جدید انسان کی سرکشی کی کہانی

اٹھارویں صدی کے ملحد فلاسفہ نے یہ بلند و بانگ دعوی کرکے مذہب کو رد کردیا تھا کہ ھم سچ، حقیقت، معنی، قدر، عدل، علم اور حسن کو وحی کی بنیاد پر قبول کرنے کے بجاۓ انسانی عقل پر تعمیر کریں گے، انکا دعوی تھا کہ سچ، حقیقت، معنی، قدر، عدل، علم اور حسن کی…

”جمہوری سیکولر ریاست فرد کی ذاتی زندگی میں مداخلت نہیں کرتی” (1) ۔۔۔۔۔۔ سیکولروں کی مغالطہ انگیزیاں

سیکولر لوگوں کی پھیلائی ھوئی بہت سی مغالطہ انگیزیوں (جن کا جائزہ پہلی پوسٹس میں لیا جا چکا) میں سے ایک یہ بھی ھے کہ ”سیکولر ریاست مذہبی ریاست کی طرح فرد کی ذاتی زندگی میں مداخلت نہیں کرتی، لہذا یہ مذہبی ریاست کی طرح جابرانہ (coercive) نہیں ھوتی۔ پس ریاست کو مذہبی نہیں بلکہ…

ہیرو پیدا ہوتے رہیں گے ۔ ۔ !

لالی وڈ سے بالی وڈ سے ہالی وڈ تک کی فلموں میں یہ تھیم تسلسل کے ساتھ دکھائی جاتی رہی ہے کہ جب ظلم قانون کا روپ دھار لے تو جو شخص اس ظلم کے خلاف اٹھ کھڑا ہوتا ہے، یہاں تک کہ ظالموں کو ٹھکانے تک لگادیتا ھے اسے “ہیرو” کہا جاتا ہے۔ تمام…

مولوی کا دفاع کیوں ضروری ہے ؟

تہذیبوں کے تصادم کا خاصہ یہ ہوتا ہے کہ ‘ دو مختلف و متضاد تصورات خیر’ حصول قوت کے لیے پنجہ آزمائی میں مصروف عمل ہوتے ہیں ، یہ کشمکش لازما دو کرداروں کے اردگرد لڑی جاتی ہے ، ان میں سے ہر ایک کسی ایک خیر کا نمائندہ و خیر خواہ بن کر سامنے…

سیکولرازم کا معنی – مسئلہ آخرت بےکار سوال ہے۔!

سیکولرازم کا تقاضا یہ مان لینا بھی ہے کہ معاشرتی و ریاستی صف بندی میں یہ سوال کہ ‘ افراد اس معاشرے میں زندگی بسر کرنے کے بعد جنت میں جائیں گے یا جہنم میں ‘ ایک لایعنی و مہمل سوال ہے۔ دوسرے لفظوں میں یہ بات کہ آیا ‘ افراد کو معاشرے میں ذیادہ…

مذھب کو ذاتی زندگی تک محدود کرنے کا مطلب

تہذیب جدید کا آزادی کا جھانسہ ۔۔۔۔  موجودہ تہذیب آزادی کے نام پر یہ جھانسہ دیتی ھے کہ فرد یہاں ”جو” چاھنا چاھے چاھنے اور اسے حاصل کرسکنے کیلئے آزاد ھے”۔ مگر فی الحقیقت یہ ایک لغو دعوی ھے، عملا اس نظام میں فرد صرف وہی چاہ سکتا اور چاھتا ھے جس کے نتیجے میں…

”ایک دن آزاد ھو جاؤں گا” ۔۔۔۔ جدید انسان کی عقلی کم مائیگی

جدید تہذیب آزادی کے فروغ کا دعوی کرتی ھے، مگر فی الحقیقت یہ ایک لغو دعوی ھے۔ آزادی سرمائے کی غلامی کے سواء اور کچھ نہیں۔ جدید تہذیب کی ادارتی صف بندی نے فرد کو آزادی کے ایسے سراب میں مقید کررکھا ھے کہ باوجود اس سے کہ ساری زندگی وہ آزادی کے نام پر…

!تم ھمیں گھوڑوں اور گدھوں پر بٹھانا چاھتے ھو”۔۔۔

سائنس اور جدید تہذیب پر تنقید کے جواب میں ایک عجیب و غریب استدلال جب کبھی جدید سائنس و ٹیکنالوجی اور جدید تہذیب کے مظاھر پر یہ اعتراض کیا جائے کہ یہ سرمایہ دارانہ نظم کے تانے بانے ہیں نیز یہ کہا جائے کہ ھم قرون اولی کی طرف مراجعت (احیائے اسلام) چاھتے ھیں تو…

سرمایہ داری کیا ھے؟

تنویری ڈسکورس نے جس نظام زندگی کو تعمیر کیا اور فروغ دیا اسے سرمایہ داری کہتے ہیں۔ سرمایہ داری انسان کو قائم بالذات اور اسکی آزادی کے فروغ کو عقل کے بدیہی مقصد کے طور پر مان لینے کا نام ھے۔ تنویری ڈسکورس کے مطابق انسان ‘اصولا آزاد’ ھے، ان معنی میں کہ وہ اپنے…

سرمایہ داری کے خلاف اسلام کا مقدمہ

جواز و غلبہ سرمایہ داری کیلئے مغربی مفکرین کے یہاں بالعموم دو نظریات پاۓ جاتے ہیں۔ 1) سرمایہ داری فطری اور اسی لئے عقلی نظم ھے (capitalism is natural and hence rational): یہ تعبیر بالعموم انفرادیت پسند لبرل تنویری مفکرین پیش کرتے ہیں۔ انکے نزدیک سرمایہ داری (حصول آزادی و ترقی) انسانی فطرت کا واحد…