ملحدین اور اندھی تقلید

11075301_1609596635943629_8652871493721463336_n

 

کیا اسی کو اندھا عقیدہ نہیں کہتے ہیں؟
یعنی کسی دوسرے کی بات کو بلا کسی تحقیق کے مان لینا، اور اگر وقت پڑے تو اسے ثابت تک نہ کر پانا۔۔۔؟؟
اگر یہی کام ایک مذہبی ذہن کرے تو دنیا لعن طعن کرے لیکن ایک ملحد کرے تو وہ عقل مند، محقق اور سائنس دان ہوگیا ہے؟
کیا یہی فری تھنکنگ ہے؟
میں نے ایسے بہت سے بے چارہ اور بے سہارہ ملحدین دیکھیں جن کی بے بسی پر ترس بھی آتا ہے اور ہنسی بھی۔ وہ اپنے فائدے میں سائنس کے نظریات کا استعمال کرتے ہوئے اپنے موقف کو سائنسی موقف کا درجہ دیتے تھکتے نہیں ہیں۔ لیکن جب بحث گوگل سے ہٹ کر اکیڈیمک سطح پر آتی ہے اور سائنس کے ایسے موقف، جو مذہبی نظریات کو مضبوط بنیاد فراہم کر رہے ہوتے ہیں، سامنے آتے ہیں وہاں آکر وہ فوراً اپنی باتوں سے پھر جاتے ہیں۔
در اصل الحاد ایک ایسا جھوٹ ہے جس کی نہ تو ایک زبان ہے نہ ایک ادب۔ یہ صرف اپنی دماغی خلف شار کو سلجھانے کے لیے مختلف اصطلاحات کے جواب میں “نہیں، نہیں” کی رٹ لگانے کا ایک بھونڈا سلسلہ ہے۔

-مزمل شیخ

 

فیس بک تبصرے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *